قاضی فائزعیسیٰ کیخلاف ریفرنس،حکومت نے قانونی تقاضے پورے نہیں کیے،ریفرنس دائر کرنے کی اصل وجہ کیا ہے؟سابق چیف جسٹس افتخارچودھری نے بڑا دعویٰ کردیا 12

قاضی فائزعیسیٰ کیخلاف ریفرنس،حکومت نے قانونی تقاضے پورے نہیں کیے،ریفرنس دائر کرنے کی اصل وجہ کیا ہے؟سابق چیف جسٹس افتخارچودھری نے بڑا دعویٰ کردیا

لاہور (آن لائن) کے سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے کہا کہ حکومت کی جانب سے درج کردہ حوالہ بدترین مقاصد پر مبنی ہے، پاکستان کے تمام وکیل اس معاملے پر متفق ہیں. سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری، اس کے سیاسی جماعت کے رہنما طا طاہر کا بھائی اپنے بھائی کی موت پر اپنے گھر کا دورہ کرنے آیا تھا.

اس موقع پر عدنان رؤف ایڈوکیٹ اور سیاسی سماجی شخصیات موجود تھے، ایڈووکیٹ مقصود چوہدری (سابقہ ​​کوآرڈینیٹر پاکستان بار کونسل). سابقہ ​​جسٹس نے کہا کہ سپریم کورٹ کے جج، جسٹس قاضی فیاض کے خلاف درج کردہ حوالہ جات حکومت کی بدقسمتی پر مبنی ہے جس کا حوالہ دیتے ہوئے حکومت نے قانونی ضروریات کو پورا نہیں کیا. وزیر اعظم اور صدر کابینہ نے منظوری دے دی. سپریم کورٹ کا جج کے خلاف حوالہ جمع نہیں کر سکتا. سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے کہا کہ افراط زر عام لوگوں کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوا ہے. چیف جسٹس نے کہا کہ ججز طبیعیات کے معاملے پر مل کر کھڑے ہیں اور وہ کبھی بھی وکلاء میں تقسیم نہیں ہوتے ہیں. اختلافات واضح ہوگئے ہیں کہ چیف جسٹس نے کہا کہ ڈالر کی قیمت ہر دن بڑھ رہی ہے اور حکومت ڈالر کی قیمت کو کنٹرول کرنے میں ناکام رہی ہے. سابق چیف جسٹس، پاکستان افتخار محمد چوہدری کا کہنا ہے کہ حکومت کو عام آدمی کی زندگی کو بہتر بنانے کے لئے اقدامات کرنا چاہئے.

مزید پڑھیں:  پنجاب میں نئے صوبے بنانے کا معاملہ ،پی ٹی آئی اور ق لیگ کے درمیان اختلافات کھل کر سامنے آگئے‎

پوسٹ چیف جسٹس افتخار چوہدری نے دعوی کیا کہ حکومت نے قانونی ضروریات کو پورا نہیں کیا. پہلے پیش آیا جاوید چوم.

Download Premium WordPress Themes Free
Download Premium WordPress Themes Free
Download WordPress Themes
Download Nulled WordPress Themes
free download udemy course
download coolpad firmware
Premium WordPress Themes Download
udemy free download

اپنا تبصرہ بھیجیں