انسانی بافتوں اور رگوں کے ساتھ دنیا کا پہلا تھری ڈی پرنٹڈ دل تیار 33

انسانی بافتوں اور رگوں کے ساتھ دنیا کا پہلا تھری ڈی پرنٹڈ دل تیار

ہمیشہ رہیں: اسرائیلی سائنسدانوں نے تھری ڈی پرنٹر کے ساتھ چھپی ہوئی ایک چھوٹا سا دل بنا دیا ہے جس میں انسانی ؤتوں (ٹشو) اور خون کی رگوں شامل ہیں. ماہرین نے اسے ایک اہم خصوصیت قرار دیا ہے.

اس خصوصیت کے باوجود، انسانوں کے جانور بھی یہاں تک کہ بہت دور ہیں. ٹیل ایویو یونیورسٹی کا دل جس نے دل بنایا ہے وہ ضرور یقینی طور پر انسان ہے، لیکن اس کا سائز چھوٹے خرگوش کے دل کی طرح ہے. وہ یقین رکھتے ہیں کہ دل کے اہم حصوں اور رگوں کو پرنٹر سے بھی پرنٹ کیا جا سکتا ہے اور متاثرہ مریضوں کو منتقل کیا جا سکتا ہے.

پروفیسر ٹیلیوف نے کہا کہ تاریخ میں پہلی مرتبہ، پورے دل کے خلیات، خون کی رگوں، والوز اور بکسوں کو تیار کیا گیا ہے. اس سے قبل ماضی میں صرف دل کی ساخت بنائی گئی تھی اور ان کے داخلی بیرک تیار نہیں تھے. لیکن مریضوں کے لئے اس ٹیکنالوجی کی عملی تشریح بہت دور ہے اور یہ پیش رفت پہلا قدم کہا جا سکتا ہے.

پریس کانفرنس میں یہ کہا گیا تھا کہ دل کی مقدار چیری کے طور پر ہے اور اس کی تفصیلات جرنل سائنس میں شائع کی جاتی ہے. یہ دل کے خلیوں کو جھک سکتا ہے لیکن پمپ نہیں سکتا، لیکن سائنسدانوں نے کہا کہ وہ ایک سال میں جانوروں کو منتقل کرنے کے قابل ہو جائیں گے.

مزید پڑھیں:  ملک بھر کے نوجوانوں کوحیران کن پیکیج فراہم کرنے کی تیاریاں

ڈاکٹر تویویف نے کہا کہ اگلے دس سالوں میں، انسانی حقوق پرنٹر کی طرف سے دنیا کے جدید ترین ہسپتالوں کو پرنٹ کیا جائے گا اور وہ بھی منتقل کر سکتے ہیں. ان کے مطابق، دنیا بھر میں دل کی بیماری عام ہوتی ہے اور زیادہ تر موت کی وجہ سے ہوتی ہے. ایک دل کی شرح کم ہے اور جسم کی منتقلی کے بعد جسم ان سے انکار کرتا ہے. اسی وجہ سے خصوصی سیاہی انسانی گرین سے بنائے جاتے ہیں، جس کی وجہ سے تی ڈال بن گیا ہے.

پوسٹ انسانی فن اور رگوں کے ساتھ دنیا کا پہلا قدم دل سے دل کی تیاری پہلے پیش آیا ایکسپریس اردو.

#HealthNews

Free Download WordPress Themes
Download Best WordPress Themes Free Download
Download Best WordPress Themes Free Download
Download Best WordPress Themes Free Download
lynda course free download
download intex firmware
Download WordPress Themes Free
download udemy paid course for free
کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں