کسی کو قومی خزانے سے بیرون ملک علاج کرانے کی اجازت نہیں دیں گے،وزیراعظم عمران خان نے ٹیکس دینے والوں کو پاکستان کے وی آئی پیز قرار دے دیا 20

کسی کو قومی خزانے سے بیرون ملک علاج کرانے کی اجازت نہیں دیں گے،وزیراعظم عمران خان نے ٹیکس دینے والوں کو پاکستان کے وی آئی پیز قرار دے دیا

اسلام آباد(این این آئی)وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہم نے خود کو نہ بدلا تو حالات مزید خراب ہوں گے، ٹیکس دینے والے لوگ پاکستان کے وی آئی پیز ہیں، گیس کی قیمتیں نہ بڑھاتے تو گیس کمپنیاں بند ہوجاتیں ،کسی کو قومی خزانے سے بیرون ملک علاج کرانے کی اجازت نہیں دیں گے،ایف بی آر میں اصلاحات لارہے ہیں جس کے ذریعے ہم ٹیکسوں کی مد میں eight ہزار روپے وصول کرسکتے ہیں۔ بدھ کو وزیراعظم آفس اسلام آباد میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے

وزیر اعظم نے کہا کہ ملک کے حالات آج مشکلات کا شکار ہیں، ہم نے خود کو تبدیل نہ کیا تو معاملات اور مشکل ہوجائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ ہم ان لوگوں کی قدر کرتے ہیں جو ٹیکس دیتے ہیں، پاکستان کے وی آئی پیز وہ ہیں جو ٹیکس دیتے ہیں، 17 لاکھ ٹیکس فائلرز 21 کروڑ لوگوں کا بوجھ برداشت نہیں کرسکتے، ملک میں صرف 72 ہزار ایسے لوگ ہیں جنہوں نے اپنی آمدنی کو 2 لاکھ روپے سے زیادہ ظاہر کر رکھا ہے، ہم عام لوگوں پر ٹیکس لگاتے ہیں جو ناانصافی ہے، یہ ظلم کا نظام ہے کہ غریب عوام پر بوجھ ڈال دیا جائے۔وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت کے پاس گیس کی قیمتیں بڑھانے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں تھا، گیس کی قیمتیں نہ بڑھاتے تو گیس کمپنیاں بند ہوجاتیں۔ انہوں نے کہاکہ مدینہ کی ریاست دنیا کا کامیاب نمونہ تھا، اس کی بنیاد پر مسلمان 700 سال تک سب سے آگے رہے، مدینہ کی ریاست میں زکواۃ کا نظام رائج کیا گیا، جس کے تحت امیر لوگوں سے وصولی کی جاتی اور اسے غریبوں پر خرچ کیا جاتا تھا۔وزیر اعظم نے کہا کہ ملک میں صرف 72 ہزار ایسے لوگ ہیں جنہوں نے اپنی آمدنی کو 2 لاکھ روپے سے زیادہ ظاہر کر رکھا ہے۔ 17 لاکھ ٹیکس فائلرز 21 کروڑ لوگوں کا بوجھ برداشت نہیں کرسکتے، ہم عام لوگوں پر ٹیکس لگاتے ہیں جو ناانصافی ہے، یہ ظلم کا نظام ہے کہ غریب عوام پر بوجھ ڈال دیا جائے۔ کسی کو قومی خزانے سے بیرون ملک علاج کرانے کی اجازت نہیں دیں گے۔وزیر اعظم نے کہا کہ ٹیکس ریٹ نہیں ٹیکس نیٹ بڑھانے پریقین رکھتے ہیں،

مزید پڑھیں:  حکومت کا موٹر وہیکل کی بک ختم کرکے سمارٹ کارڈ متعارف کرانے کا فیصلہ،فیس کتنی ہوگی؟تفصیلات جاری

ایف بی آر میں اصلاحات لارہے ہیں جس کے ذریعے ہم ٹیکسوں کی مد میں eight ہزار روپے وصول کرسکتے ہیں۔ کسی کو قومی خزانے سے بیرون ملک علاج کرانے کی اجازت نہیں دیں گے، ہم نے وزیر اعظم آفس کے اخراجات میں30فیصد کمی کی ہے، اپنے گھر کو کیمپ آفس ڈکلیئر نہیں کیا، اپناخرچہ خود اٹھاتا ہوں۔وزیراعظم نے تمام وزارتوں کو اخراجات میں 10فیصد کمی لانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم ہاؤس کے اخراجات میں 30فیصد کمی کرچکا ہوں اور

کسی کو ٹیکس کے پیسے پر علاج کیلئے باہرنہیں بھیجیں گے۔انہوں نے کہا کہ مشکل حالات میں ملکی اقتصادیات کو سنبھالا دینا ہوگا، چند ہاتھوں میں دولت کا ارتکازتمام ترسماجی برائیوں کی جڑہے اور ہم ٹیکس ریٹ کے بجائے ٹیکس نیٹ کو بڑھانے پریقین رکھتے ہیں۔معاشی نظام کو ٹھیک کرنے کی ضرورت کو اجاگر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمیں نظام بدلنا ہے کیونکہ نوکریاں دینی ہیں اور ملک چلانے کیلئے پیسہ اکھٹا کرنا ہے لیکن اسی طرح چلاتے رہے تو ممکن نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ سعودی ولی عہد نے کہا کہ میں خیرات دینے نہیں آیا بلکہ ہم سمجھتے ہیں کہ پاکستان میں بڑی صلاحیت ہے اس لیے انہوں نے اتنی بڑی سرمایہ کاری کی اور ہم جیسے جیسے گورننس کا نظام ٹھیک کریں گے تو اس ملک میں سرمایہ کاری بھی بڑھے گی۔

The publish کسی کو قومی خزانے سے بیرون ملک علاج کرانے کی اجازت نہیں دیں گے،وزیراعظم عمران خان نے ٹیکس دینے والوں کو پاکستان کے وی آئی پیز قرار دے دیا appeared first on Zeropoint.

Get More News

Download WordPress Themes
Free Download WordPress Themes
Download WordPress Themes Free
Free Download WordPress Themes
lynda course free download
download lava firmware
Free Download WordPress Themes
ZG93bmxvYWQgbHluZGEgY291cnNlIGZyZWU=

اپنا تبصرہ بھیجیں