نواز شریف کی صحت کے مسائل بڑھے تو ذمہ دار عمران نیازی ہوں گے، شہباز شریف 12

نواز شریف کی صحت کے مسائل بڑھے تو ذمہ دار عمران نیازی ہوں گے، شہباز شریف

 اسلام آباد: مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ محمد نواز شریف کی صحت کے مسائل بڑھے تو اس کے ذمہ دار عمران نیازی اور پنجاب حکومت ہوں گے۔

اپنے بیان میں شہباز شریف نے کہا کہ نواز شریف کی صحت کی خرابی کی اطلاع پوری قوم کے لیے فکرمندی کا باعث ہے، three بار پاکستان کے وزیراعظم اور ملک کی بے مثال خدمت کرنے والے ایک دیانت دار اور محب وطن شخص کے ساتھ یہ ناروا سلوک سیاسی انتقام کی بدترین مثال ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ سابق وزیراعظم کے ذاتی معالجین کو بلاتاخیر جیل میں رسائی دے کر قانونی تقاضے پورے کیے جائیں، خدانخواستہ قائد محمد نواز شریف کی صحت کے مسائل بڑھے تو اس کے ذمہ دار عمران نیازی اور پنجاب حکومت ہوگی۔

یہ پڑھیں : نواز شریف کے ذاتی معالج کو ان سے ملنے نہیں دیا جارہا، مریم نواز

دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ نواز شریف کے معالجین امراض قلب کو جیل میں ان تک رسائی نہ دینا ظلم کی انتہا ہے، پاکستان کو ایٹمی قوت بنانے والے شخص کے ساتھ جیل میں جو سلوک ہو رہا ہے اس کی وجہ سے ان کی طبیعت بگڑی ہے، ان کے ساتھ یہ رویہ ناقابل قبول، شرم ناک اور قابل مذمت ہے، لہذا ان کے علاج کے لیے ہنگامی انتظامات کیے جائیں۔

مزید پڑھیں:  ملائیشن نژاد دوشیزہ پشاور کے نوجوان کے عشق میں پاکستان چلی آئی

قبل ازیں مسلم لیگ (ن) کے رہنما رانا ثنا اللہ نے کہا کہ حکمران کان کھول کر سن لیں کہ محمد نواز شریف کی صحت کو کوئی گزند پہنچا تو عوام حکومت کی اینٹ سے اینٹ بجا دیں گے، پاکستان مسلم لیگ (ن) اور عوام کو مجبور نہ کیا جائے کہ وہ اپنے قائد کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں پر اپنی قیادت کے حکم اور صبر کا دامن چھوڑنے پر مجبور ہوجائیں، قائد مسلم لیگ (ن) کی صحت اور علاج معالجہ کے لیے متعلقہ حکام اپنی قانونی ذمہ داریاں پوری کریں۔

The publish نواز شریف کی صحت کے مسائل بڑھے تو ذمہ دار عمران نیازی ہوں گے، شہباز شریف appeared first on ایکسپریس اردو.

Download Best WordPress Themes Free Download
Premium WordPress Themes Download
Download WordPress Themes
Premium WordPress Themes Download
udemy course download free
download xiomi firmware
Download Nulled WordPress Themes
online free course

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں