زیر حراست نیب کے جعلی افسر کے گھر پر چھاپہ کیا کچھ برآمد ہوا؟اہلکار دیکھ کر دنگ رہ گئے 19

زیر حراست نیب کے جعلی افسر کے گھر پر چھاپہ کیا کچھ برآمد ہوا؟اہلکار دیکھ کر دنگ رہ گئے

اسلام آباد/ملتان (اے این این )قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جاوید اقبال کی ہدایت پر نیب ملتان کی ایک ٹیم نے احمد ممتاز باجوہ ایڈیشنل ڈائریکٹر کی سر برا ہی میں ملتان میں نیب کے جعلی افسر ملزم سید محمد اعجاز حسین کاظمی کی نشاندہی پر ان کے گھر بہاول پور سے 34لاکھ روپے 16،موبائل فون ،7مختلف موبائل فون کمپنیوں کی جعلی سمیں ، مختلف محکموں کی جعلی مہریں اور وزٹنگ کارڈز برآمد کر لیے ہیں۔جبکہ ملزم سید محمد اعجاز حسین کاظمی کے مختلف بنکوں کے اکاؤنٹس میں موجودکروڑوں روپے کی موجودگی کا بھی مبینہ طور پر پتہ لگالیا ہے ۔

قومی احتساب بیورو کی طرف سے جاری اعلامیے کے مطابق نیب ملتان نے نیب کے جعلی افسر سید محمد اعجاز حسین کاظمی کی طرف سے لوٹے گے مختلف افراد اور اداروں کے افسران سے بھی رابطہ کر لیا ہے جن کو ملزم سیّد محمد اعجاز حسین کاظمی نے لوٹا تھا ۔ ان تمام افراد کو قانون کے مطابق معزز احتساب عدالت کی اجازت سے متعلقہ متاثرین کو واپس کی جائے گی۔ واضع رہے کہ نیب ملتان نے گزشتہ روز سیّد محمد اعجاز حسین کاظمی کو نیب کا جعلی افسر بن کر عوام کو لوٹنے اور سرکاری افسران سے غیر قانونی کام کرانے کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔ ملزم سیّد محمد اعجاز حسین کاظمی نے ریونیو اتھارٹیز کے ساتھ مل کر عوام کے تقریباً 26 ملین روپے لوٹنے کا مبینہ طور پر اعتراف کیا کیا تھا جس پرنیب ملتان نے سیّد محمد اعجاز حسین کاظمی ملزم کو احتساب عدالت ملتان میں پیش کرکے 14 دنوں کا ریمانڈ حاصل کر کے ملزم سیّد محمد اعجاز حسین کاظمی کے خلاف قانون کے مطابق انکوائری شروع کر دی تھی۔ قومی احتساب بیورو نے ایک بار پھر عوام الناس کو ان کے مفاد میں آگاہ کیا ہے کہ چیئرمین نیب براہ راست کسی سے ٹیلی فون پر رابطہ نہیں کرتے بلکہ ایک طریقہ کار کا تعین کر دیا گیا ہے ۔ہر کال اور کام کا مکمل ریکارڈ رکھا جاتا ہے ۔کچھ ناعاقبت اندیش عناصر چیئرمین نیب جاوید اقبال بن کر اپنے ذاتی مفادات اور غیر قانونی کاموں کیلئے مختلف محکموں کو ٹیلی فون کرکے مختلف ہدایات دیتے ہیں جو کہ قانونی اور اخلاقی لحاظ سے درست قدم نہیں ہے جس کی نہ صرف مذمت کی جاتی ہے بلکہ نیب عوام الناس اور سرکاری اداروں کو آگاہ کرتا ہے کہ نیب قانون کے مطابق ہمیشہ کام کرنے پر یقین رکھتا ہے اور کسی بھی ٹیلی فون کال کے مصدقہ ہونے کا واحد طریقہ یہ ہے کہ نیب ترجمان سے رابطہ کرکے اس کی تصدیق کی جائے۔

مزید پڑھیں:  ’’صبر کرو! آ رہا ہوں!‘‘ امریکہ میں اشتہاری ملزم نے پولیس کی جانب سے فیس بک پر دیے اپنے ہی انتہائی مطلوب کے اشتہار پر کومنٹ کرکے انٹرنیٹ پر میلہ لوٹ لیا، دیکھئے اسکی پولیس سے کیا بات چیت ہوئی؟

The put up زیر حراست نیب کے جعلی افسر کے گھر پر چھاپہ کیا کچھ برآمد ہوا؟اہلکار دیکھ کر دنگ رہ گئے appeared first on Zeropoint.

Get More News

Download WordPress Themes Free
Free Download WordPress Themes
Download WordPress Themes
Download Nulled WordPress Themes
free download udemy course
download coolpad firmware
Download WordPress Themes
online free course

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں