روضہ رسول ؐ میں نظر آنیوالی یہ کھڑکی کیوں رکھی گئی تھی ، بخاری شریف میں حدیث ہے کہ مدینہ شریف میں ۔۔۔ 19

روضہ رسول ؐ میں نظر آنیوالی یہ کھڑکی کیوں رکھی گئی تھی ، بخاری شریف میں حدیث ہے کہ مدینہ شریف میں ۔۔۔

‮بخاری شریف میں حدیث ہے کہ مدینہ شریف میں بارش نہیں برس رہی تھی قحط سالی پڑ گئی ۔کچھ صحابی اُم المومنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنها کی خدمت میں حاضر ہوئے اور عرض کی کہ اماں جان کوئی ایسا وظیفہ کوئی ایسا امر بتائیں کہ قحط سالی ختم ہو جائے اور ابر رحمت برسنے لگے۔تو اُم المومنین حضرت عائشہ صدیقہ طاہرہ طیبہ رضی اللہ عنها

فرمانے لگیں کہ روضئہ رسولؐ کی چھت پر جو روشندان یعنی کھڑکی رکھی گئی ہے اسے کھول دو.جب روضئہ رسول کا اور آسمان کا سامنہ ہوا تو خوب بارش برسنے لگی یہاں تک کہ لوگ دوبارہ ام المومنین کی بارگاہ میں حاظر ہوئے اور روضئہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی وہ کهڑکی دوبارہ بند کر دو.چنانچہ کھڑکی بند کرتے ہی بارش تھم گئیبارش روکنے کے وظائف و تدابیر دریافت کرنے لگے۔تو اماں عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنها نے فرمایا کہ روضئہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی وہ کهڑکی دوبارہ بند کر دو.چنانچہ کھڑکی بند کرتے ہی بارش تھم گئی

The submit روضہ رسول ؐ میں نظر آنیوالی یہ کھڑکی کیوں رکھی گئی تھی ، بخاری شریف میں حدیث ہے کہ مدینہ شریف میں ۔۔۔ appeared first on Urdu News.

Download Nulled WordPress Themes
Download WordPress Themes
Download WordPress Themes Free
Download WordPress Themes
lynda course free download
download redmi firmware
Download WordPress Themes Free
download udemy paid course for free
مزید پڑھیں:  کدو کے چھلکے خشک کرکے اسے استعمال کرنے سے کیا فائدہ ہو تا ہے ؟ نبی کریم ﷺ کی پسندیدہ سبزی کا ایسا استعمال جس نے سائنس کو بھی دنگ کر دیا

اپنا تبصرہ بھیجیں